وزارت واپس لینے کا امکان ! وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی ایسا کیوں ہو گا؟ وزیراعظم نے کیا فیصلہ کیا؟

سعودی عرب سے متعلق متنازعہ بیان دینے پر وزیراعظم کا اظہار برہمی، وزیر مملکت کو سعودی سفیر سے ملاقات کرکے بیان پر معافی مانگنا پڑی۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے اقتدار میں آنے کے بعد وفاقی کابینہ میں پہلی بڑی تبدیلی کا فیصلہ کیا ہے۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی سے نالاں دکھائی دیتے ہیں۔ حال ہی میں وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کی جانب سے سعودی عرب سے متعلق ایک متنازعہ بیان دیا گیا تھا۔ وزیر مملکت شہریار آفریدی نے سعودی عرب میں پاکستانیوں کی حالت زار سے متعلق سعودی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔اسی باعث سعودی عرب سے وزیر مملکت شہریار آفریدی کی باقاعدہ شکایت کیے جانے کا بھی دعویٰ کیا گیا ہے۔اسی باعث وزیراعظم عمران خان نے وزیر مملکت شہریار آفریدی کو خوب جھاڑ پلائی۔ بعد ازاں وزیراعظم کے حکم پر وزیر مملکت شہریار آفریدی نے سعودی سفارت خانے کا دورہ کیا اور سعودی سفیر سے خصوصی ملاقات کی۔ ملاقات کے دوران شہریار آفریدی کی جانب سے سعودی سفیر سے اپنے بیان کی معافی مانگی۔ تاہم ذرائع کا کہنا ہے کہ اس معافی تلافی کے باوجود وزیراعظم شہریار آفریدی سے تاحال ناراض ہیں، اسی باعث امکان ہے کہ شہریار آفریدی سے وزیر مملکت برائے داخلہ کا قلمدان واپس لے لیا جائے گا۔تاہم اس حوالے سے نہ وزارت داخلہ اور نہ ہی وزیراعظم ہاوس کی جانب سے کسی قسم کی تصدیق یا تردید کی گئی ہے۔ اگر شہریار آفریدی سے وزیر مملکت برائے داخلہ کا قلمدان واپس لیا جاتا ہے، تو یہ موجودہ حکومت کی کابینہ میں کی جانے والی پہلی تبدیلی ہوگی۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment