خواجہ سعد رفیق کا چئیرمین نیب کو خط، ڈی جی نیب میرے خلاف پارٹی بن چکے ہیں۔

خواجہ سعد رفیق نے چئیرمین نیب کو خط لکھ اپنے خدشات کا اظہار کر دیا۔انہوں نے خط میں درخواست کی ہے کہ ڈی جی نیب میرے خلاف پارٹی بن چکے ہیں، میرا کیس لاہور ریجن کے علاوہ کسی اور ریجن کے حوالے کیا جائے۔تفصیلات کے مطابق ڈی جی نیب لاہور شہزاد سلیم کے میڈیا پر دئیے گئے انٹرویو نے سیاسی شخصیات میں کھبلی مچا دی ہے بالخصوص وہ لوگ جو پہلے ہی سے نیب کی انکوئریوں کا شکار ہیں وہ ڈی جی نیب لاہور سے خاصے نالاں ہیں۔
یہی وجہ ہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے چئیرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال کو خط لکھ دیا ہے۔اپنے خط میں تحفظات کا اظہار کرتے پوئے خواجہ سعد رفیق کا کہنا ہے کہ ڈی جی نیب میرے کیس میں پارٹی بن چکے ہیں انہوں نے میڈیا پر میرے خلاف ہونے والی انکوائری کے حوالےسے بات کی ہے۔

ان حالات میں شفاف تحقیقات ممکن نہیں ،اس لئے میں آپ سے درخواست کرتا ہوں کہ میرے کیس کو لاہور ریجن کے علاوہ کہیں بھیج دیا جائے ۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ میں نے اب تک نیب سے بالکل تعاون کیا ہے لیکن نیب میرے خلاف کچھ بھی ثابت نہیں کر سکا۔یاد رہے کہ ڈی جی نیب لاہور نے اپنے انٹرویو میں یہ بھی کہا تھا کہ سعد رفیق کی انکوائری مکمل ہو گئی ہے اور جلد ہی انکی گرفتاری عمل میں لائی جا سکتی ہے۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment