’میری بیوی کے کسی سے ناجائز۔ ۔ ۔‘ شوہر کے ہاتھوں اہلیہ قتل لیکن پھر لاش کیساتھ کیا سلوک کیا؟ ایسی خبرآگئی کہ پولیس اہلکار بھی گھبرا گئے

لو میرج کرنیوالی بیوی کو مبینہ آشنا سے فون پربات کرنے کے شبہ میں گلا دبا کر قتل کرنے کے بعد تیز دھار آلہ سے اسکے جسم کے ٹکڑے کر دئیے ، پو لیس نے ملزم کو حراست میں لیکر توڑے میں بند نعش برآمد کر لی

نارووال کے رضا رحمان نے گیارہ سال قبل سکول ٹیچر عدیلہ کوثر سے پسند کی دوسری شادی کی تھی۔ دونوں جلیل ٹاﺅن کرایہ کے مکان میں رہائش پذیر تھے۔ بعدازاں رضا رحمان روز گار کے سلسلہ میں بیرون ملک چلا گیا اور پھر کچھ عرصہ قبل واپس آگیا۔ گزشتہ روز اپنی بیوی کو مبینہ آشنا سے فون پر بات کرنے کے شبہ میں گلا دبا کر قتل کرنے کے بعد تیز دھار آلہ سے اسکے جسم کے ٹکڑے دئیے، نعش توڑوں میں بند کر دی۔

ملزم نعش کو نہر برد کرنے جا رہا تھا کہ تھانہ صدر پو لیس نے اطلاع ملنے پر چھاپہ مارکر ملزم کو گرفتار کر لیا تاہم پو لیس نے نعش کو ضروری کاروائی کیلئے ڈسٹرکٹ ہسپتال منتقل کر کے تحقیقات کا دائرہ وسیع کر دیا ، مقتولہ تین بچوں کی ماں تھی ، ادھر یہ بھی معلوم ہوا کہ ملزم کا کالعدم تنظیم سے تعلق ہے ، ملزم نے پو لیس حراست میں ابتدائی بیان دیتے کہا کہ اسکی بیوی کے کسی سے ناجائز مراسم تھے جسے گلہ دبا کر قتل کرنے کے بعد چھری سے ٹکڑے کر دئیے تھے۔ ملزم نعش کو نہر برد کرنے جا رہا تھا جسے گرفتار کیا گیا۔ ملزم کے مطابق ان نے آلہ قتل پہلے ہی نہر میں پھینک دیا تھا۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment