13افراد/ یونان کا جھانسہ دے کر جہاز/ سیالکوٹ/ا جلالپورجٹاں/سامنے یونان دریائے چناب کے کنارے چھوڑ گیا

سامنے یونان ہے انسانی اسمگلر 13 افراد کو دریائے چناب پر چھوڑ کر فرار ہوگیا۔ملزم ان افراد کو کراچی سے جہاز پر سیالکوٹ لایا اور وہاں سے ڈالے میں چھپا کر گاؤں چوپالا لے آیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ انسانی اسمگلر 13 افراد کو یونان پہنچانے کا جھانسہ دے کر دریائے چناب کے کنارے چھوڑ کر فرار ہوگیا۔بتایاگیا ہے کہ انسانی سمگلر اندرون سندھ سے یونان جانے کے شوقین پیر افراد کو کراچی سے بذریعہ ہوائی جہاز سیالکوٹ لے آیا جہاں سے انہیں ڈالے میں بٹھاکر ترپال سے ڈھانپ دیا گیا۔
جس کے بعد ا جلالپورجٹاں سے ہوتا ہوا دریائے چناب کے کنارے چوپالہ لے آیا۔وہاں اتار کر انہیں اشارے سے بتایا کہ سامنے یونان ہے۔ کشتی کے ذریعےسے تم لوگوں کو وہاں پہنچایا جائے گا۔اور کہا کے آپ سب تھوڑی دیر انتظارکریں، میں کھانا لے کر آتا ہوں۔ملزم 13 افراد کو وہاں بٹھا کر خود فرار ہوگیا جبکہ وہ تمام افراد تمام رات دریائے چناب کے کنارے پڑے رہے۔
اگلے روز صبح ایک ٹریکٹر ٹرالی والا دریا سے ریت بھرنے کے لئے آیا تو ان افراد نے کہا کہ ہم پاکستانی ہیں اور بارڈر کراس کر کے یونان میں داخل ہونا چاہتے ہیں۔جس کے بعد ٹریکٹر والا بھی حیران ہوا اور کہا کہ میں بھی پاکستانی ہوں اور یہاں کوئی بارڈر نہیں ہے بلکہ یہ دریائے چناب ہے اور اس کے دوسری طرف سیالکوٹ ہے۔جس کے بعد تمام افراد ہاتھ ملتے رہ گئے۔اور انہیں احساس ہو گیا کہ ان کے ساتھ ملزم ہاتھ کر گیا ہے۔ابھی تک ملزم کے بارے میں کچھ معلومات سامنے نہیں آئیں۔کیونکہ وہ ان تمام افراد کو یونان کا جھانسہ دینے کے بعد فرار ہو گیا تھا جب کہ تمام متاثرہ افراد کو اگلے روز معلوم ہوا کہ ان کے ساتھ بہت بڑا دھوکا ہو گیا ہے۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment