زندگی ایسے بدلے گی کچھ اس طرح : تنقید سے تنگ افراد کے لیے خاص کر

اپنی زندگی میں آگے بڑھنے کے لئے ایسے لوگوں کی باتوں کو نظر انداز کرنا جن کے بارے میں سوچتے رہنا ان کو اس طرح نظر انداز کیا جاسکتا ہے یا ان پر غور نہیں کیا جاسکتا جس طرح کے کوئی پاگل آتا ہے اور آپ کو کچھ کہتا جاتا ہے اس کی بجائے کے آپ اس کے بعد  داس دن تک سوچوں لیکن نہیں آپ نہیں سوچوں گے . لیکن جب کوئی عام انسان آپ کو کچھ برا کہتا ہے یا کچھ بھی بول دیتا ہے تو آپ اس کے بارے میں سوچتے رہتے ہو نہیں اس انسان نے مجھے اس طرح کیوں بولا لیکن یہ غلطی ہمارے اندر ہے ہم اس کو سوچتے رہتے ہیں کہ اس انسان نے ہم کو ایسا کیوں بولا .بجائے اس کے کہ ہم اس کو بھول کر اپنی زندگی میں آگے بڑھیں ہم اس بات کو سوچتے رہتے ہیں . لیکن اس پاگل کی طرح انکی باتوں کو بھی نظر انداز کر دیں جو آپ کو برا کہتے ہیں آپ کو بے وجہ ہر وقت تنقید کا نشانہ بنتے ہیں جس کی وجہ سے آپ اپنی زندگی میں آگے نہیں بڑھ سکتے اور انہی کی باتوں کو سوچتے رہتے ہیں. البتہ آپ ان کی باتوں پر زیادہ دھیان مت دیں . اگر آپ اس بات کو مان لیتے ہیں کہ کسی کو تنگ کرنا . کسی کو تنقید کا نشانہ بنانا کسی انسان کی فطرت ہے. اگر آپ یہ بات مان لیں گے تو آپ ٹھیک ہو جائیں گے. کہ جب آپ خود اندر سے اپنے دل سے دماغ سے سوچ لیتے ہیں تو وہ انسان ایسا ہے میں جیسا ہو ویسا ہوں اس نے اس کی فطرت ہی ایسی ہے جب آپ یہ بات مان لیتے ہیں تو آپ اپنی زندگی کو ٹھیک کر لیتے ہیں پھر آپ اپنی زندگی میں آگے بڑھ سکتے ہیں آپ ان باتوں کو سوچنا چھوڑ دیں گے. تو ان باتوں پر غور نہ کریں جس سے آپ اپنی زندگی میں آگے نہ بڑھ سکے اپنا کام نہ کر سکے اپنی خواہشات کو پورا نہ کر سکے ان لوگوں سے دور ہو جائیں جو آپ کو ہر وقت تنقید کا نشانہ بنائے رکھتے ہیں. کسی ایسے انسان کا انتخاب کریں جو جو آپکو طرزے زندگی کے اصول سکھا سکے بجائے آپ پر تنقید کرنے کے آپ کو کچھ سیکھا سکے اور اپنی خواہشات کو پورا کرنے کے لئے پرعزم رہیں اور محنت کریں جتنی آپ خود محنت کریں گے اتنی ہی اچھی زندگی گزار سکیں گے
:ایڈیٹر اردو زاویہ:

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment