خواجہ آصف کی اہلیت برقرار سپریم کورٹ نے تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا

خواجہ آصف پر مفادات کے تصادم کا کوئی مقدمہ نہیں بنتا۔ سپریم کورٹ کا تفصیلی فیصلہ
خواجہ آصف کی اہلیت برقرار رکھنے سے قبل سپریم کورٹ نے تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے تفصیلی فیصلے میں کہا کہ خواجہ آصف پر مفادات کے تصادم کا کوئی مقدمہ نہیں بنتا۔ درخواست گزار عثمان ڈار خواجہ آصف کے خلاف کوئی الزام ثابت نہیں کر سکے۔ تاہم عدالت نے قرار دیا ہے کہ کسی بھی رکن پارلیمنٹ کے لئے بیرون ملک ملازمت کرنا مناسب نہیں۔
اثاثے ظاہر ہونے سے متعلق نااہلی درخواست پر وقت کی قدغن نہیں لگائی جا سکتی، جب تک چھپائے گئے اثاثے میں بدنیتی سامنے نہ آئے،تاحیات نااہل نہیں کرسکتے، ہر اثاثے چھپانے کو بدنیتی نہیں قرار دیا جا سکتا۔ یاد رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے اثاثے چھُپانے اور اقامہ رکھنے پر آئین کے آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت مسلم لیگ ن کے رہنما خواجہ آصف کو نا اہل کیا تھا جس کے بعد یکم جون کو سپریم کورٹ نے اسلام آباد ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیا تھا۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment