کیا چین امریکہ کی جگہ لینا چاہتا ہے، چین نے ایسا دھماکہ خیزاعلان کر دیا کہ سب حیران رہ گئے

امریکہ میں تعینات چینی سفیرنے کہا ہے کہ چین کسی کے خلاف تجارتی جنگ نہیں چاہتا ، امریکہ ہی کو تجاررتی جنگ کی ذمہ داری اٹھانی چاہیے، دنیا کی بیس فیصد آبادی والے ملک کی ترقی چوری سے نہیں ہو سکتی،چینی عوام کی محنت چین کی ترقی کی اصل وجہ ہے۔ چائنہ ریڈیو انٹرنیشنل کے مطابق امریکہ میں چین کے سفیر زوئی تھین کھائی نے ایک انٹرویو میںتجارتی جنگ کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ تجارتی جنگ کا آغاز کرنے والے کا تعین کرنا بہت اہم ہے۔ چین کسی کے خلاف تجارتی جنگ نہیں چاہتا ،

امریکہ ہی کو تجاررتی جنگ کی ذمہ داری اٹھانی چاہیے۔دو طرفہ تجارت سے دونوں فریقین کو فوائد حاصل ہوئے ہیں ۔ چین اپنے مفادات کی حفاظت کے لیے جوابی اقدامات اختیار کرنے پر مجبور ہے اس سوال پر کہ کچھ امریکی سیاستدانوں کا کہنا ہے کہ چین کی ترقی دوسرے ممالک کی تکنیک چوری کرنے کے باعث ممکن ہوئی ہے، زوئی نے کہا کہ چینی عوام کی محنت چین کی ترقی کی اصل وجہ ہے۔یہ ایک عام فہم بات ہے کہ دنیا کی بیس فیصد آبادی والے ملک کی ترقی چوری سے نہیں ہو سکتی۔ امریکی فریق کو اپنے دعوے کا ثبوت پیش کرنا چاہیے۔بحر جنوبی چین میں دونوں ملکوں کی بحریہ کے جہازوں کے درمیان صف آرائی اور تائیوان کے لیے امریکہ کی طرف سے اسلحہ کی فروخت کا ذکر کرتے ہوئے چینی سفیر نے کہا کہ مذکورہ صف آرائی چین کے دروازے پر ہی ہوئی،ایسا نہیں ہوا کہ چینی جنگی جہاز کیلیفورنیا کے ساحل پر پہنچے۔اس لیے کون غلط ہے اور کون درست ہے بالکل صاف عیاں ہے۔نامہ نگار نے پوچھا کہ کیا چین امریکہ کی جگہ لینے کا ارادہ رکھتا ہے یا نہیں۔ چینی سفیر نے کہا کہ چینی حکومت کا مقصد اپنے عوام کے لیے خوشحالی لانا ہے نہ کہ کسی ملک کی حیثیت کو چیلنج کرنا ۔ہم امریکہ سمیت تمام ممالک کے ساتھ مل کر بنی نوع انسان کے ہم نصیب معاشرے کی تعمیر کرنے کو تیار ہیں۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment