العزیزیہ ریفرنس،خواجہ حارث اورنیب پراسیکیوٹراکرم قریشی کے درمیان تلخ کلامی

احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نوازشریف کیخلاف العزیزیہ ریفرنس کی سماعت جاری ہے، احتساب عدالت کے جج محمد ارشد ملک مقدمے کی سماعت کر رہے ہیں ،دوران سماعت خواجہ حارث اورنیب پراسیکیوٹراکرم قریشی میں تلخ کلامی ہو گئی۔

نوازشریف کے وکیل خواجہ حارث نے کہا کہ آپ لوگوں نے کل ایف آئی اے اورنیب ہیڈکوارٹرزکے خطوط پرجھوٹ بولا،نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ آپ کے موکل جھوٹ بولتے ہیں،ملک لوٹ کرکھاگئے،یہاں آکرکہتے ہیں ہم معصوم ہیں۔خواجہ حارث نے کہا کہ کیسی باتیں کررہے ہیں، کیاآپ یہاں سیاست کرنے آئے ہیں؟آپ فیصلہ سنارہے ہیں کہ ہم جھوٹے اورچورہیں،ہم آپ کےخلاف درخواست دے سکتے ہیں۔

نیب پراسیکیوٹر اکرم قریشی نے کہا کہ میں بھی آپ کےخلاف درخواست دوں گا، کل آپ کی معاون وکیل نے مجھے گیٹ آؤٹ بولاتھا،نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ عائشہ حامدکے والدمیرے کلاس فیلورہے اس لیے بچی بولا۔

جج ارشد ملک نے کہا کہ عائشہ حامدایڈووکیٹ کل غصہ کرگئی تھیں،بہترہوگا استغاثہ اور دفاع آپس میں بات نہ کیا کریں،میں یہاں بیٹھا ہوں ،مجھ سے بات کیاکریں۔

اپنے دوستوں کے ساتھ شیئر کریں

یہ بھی پڑھیے

Leave a Comment